Home / ٹیکنالوجی / نمی والے مقامات پر کرونا کا تیزی سے پھیلاؤ، سپرکمپیوٹر کی تہلکہ خیز فوٹیج

نمی والے مقامات پر کرونا کا تیزی سے پھیلاؤ، سپرکمپیوٹر کی تہلکہ خیز فوٹیج

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق جاپان کی دو ریکین اور کوبی یونیورسٹی کے ماہرین نے کرونا کے دوبارہ پھیلاؤ کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقی مطالعہ کیا جس میں وائرس کے پھیلنے کی وجہ تلاش کرنے کے لیے سپر کمپیوٹر کی مدد لی گئی۔

ماہرین نے سپر کمپیوٹر کی مدد سے بنائی جانے والی ویڈیو جاری کی جس میں کرونا کو پھیلتے دیکھا جاسکتا ہے۔

سپر کمپیوٹر نے موسم سرما میں عمارتوں کے اندر اور خشک جگہوں پر وائرس کے تیزی سے پیھلنے کی نشاندہی بھی کی۔ تحقیقی ماہرین کا کہنا ہے کہ ہوا کی آمد و رفت بند ہونے کے بعد ہیومیڈیفائرز مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔

تحقیقی ماہرین نے سپرکمپیوٹر کو استعمال کرتے ہوئے گھر کے اندر متاثرہ افراد کے جسم سے خارج ہونے والے وائرس نما ذرات کا بغور مطالعہ کیا۔ جن جگہوں پر یہ تحقیق کی گئی وہاں نمی کا تناسب تیس فیصد تھا۔

ماہرین نے دیکھا کہ اس مقام پر ہوا میں موجود کرونا کے چھوٹے چھوٹے ذرات بڑھ کر دگنے ہوگئے، جن کو روکنے کا کام فیس ماسک یا شیلڈ بھی نہیں کرسکتی۔ تحقیق سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ ہوٹل میں کھانا کھانے والوں کو سامنے بیٹھے لوگوں کے مقابلے میں برابر میں بیٹھے ہوئے افراد سے زیادہ خطرہ ہوتا ہے، اسی طرح دو لوگوں کا ایک ساتھ مل کر کھانا بھی کسی خطرے سے خالی نہیں ہے۔

تحقیق کے بعد ماہرین نے جو رپورٹ تیار کی اُس میں سب نے متفقہ طور پر لکھا کہ وائرس ہوا کے ذریعے پھیلتا ہے جبکہ نمی والی جگہ پر یہ تیزی سے اثر انداز ہوتا ہے۔ ماہرین نے یہ بھی بتایا کہ وائرس کئی گھنٹوں تک ہوا میں زندہ رہ سکتا ہے۔

دی ریکن کے محققین نے اس سے پہلے بھی فوکاگو سپر کمپیوٹر کے ذریعے ٹرینوں، کام کی جگہوں اور کلاس رومز میں بھی معلق ذرات کا مطالعہ کیا تھا۔ جس کے بعد یہ نتیجہ اخذ کیا گیا تھا کہ ہوادار ٹرینوں اور مسافروں کی تعداد کو محدود کرنے سے کرونا کے پھیلاؤ کو روکا جاسکتا ہے۔

خبررساں ادارے روئٹرز کے مطابق عالمی ادارہ صحت نے تسلیم کیا تھا کہ وائرس ہوا کے ذریعے منتقل ہوتا ہے لیکن ساتھ میں یہ بھی کہا تھا کہ اس تحقیق کو حتمی نہیں کہا جاسکتا کیونکہ اس کے ثبوت نہیں ملے۔

About Rana Usman

Check Also

Increase SnapChat revenue during Corona

کورونا کے دوران اسنیپ چیٹ کی آمدنی میں اضافہ

عالمی وبا کورونا وائرس کے دوران سوشل شیئرنگ ایپلی کیشن اسنیپ چیٹ کی آمدنی میں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *